(UR)خبریں(UR)اقتصاد(UR)‏معاشرہTOP(UR)

قندھار انڈسٹریل زون میں 180 فیکٹریاں فعال، ہزاروں افراد کو روزگار میسر

کابل (بی این اے) قندہار تجارت وصنعت کے سربراہ سید محمد سرور امانی نے ہفتے کے روز باختر نیوز کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ یہاں 300 فیکٹریوں کو لائسنس مل چکے ہیں جن میں سے 180 کام کر رہی ہیں۔ جس میں تقریباً 4,500 لوگوں کو براہِ راست روزگار میسر ہوا ہے۔
امارت اسلامیہ کی حاکمیت سے قبل یہاں 150 فیکٹریاں فعال تھیں، امارت اسلامیہ کی آمد کے ساتھ ہی 30 دیگر فیکٹریاں بھی فعال ہوئیں۔
امانی کے مطابق سنو فارما کی سب سے بڑی ادویات بنانے والی فیکٹری بھی اسی صنعتی زون میں واقع ہے۔ جس نے ملکی سطح پر کام شروع کر دیا ہے۔ سیمنٹ اور ٹیکسٹائل فیکٹریوں کی تعمیر کا کام جاری ہے جو ملک کی سب سے بڑی فیکٹریاں ہوں گی۔ امارت اسلامیہ کی آمد سے پہلے انڈسٹریل زون میں فیکٹریاں بند ہونے کے قریب تھیں لیکن اب صنعتکاروں کے مسائل کے حل کے بعد بندش کی بجائے فیکٹریوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔
امانی نے کہا ہم پی وی سی پائپ، فروٹ نیٹ، پلاسٹک کی مصنوعات، چپل اور جوتے، ڈیری، آئرن وہیلنگ، زرعی آلات، صابن اور شیمپو جیسے 10 شعبوں میں خود کفیل ہیں۔ ان مصنوعات میں دوسرے ممالک سے مقابلہ کرسکتے ہیں۔
صنعت و تجارت کے سربراہ نے امارت اسلامیہ کے متعلقہ حکام سے کہا کہ وہ مذکورہ اشیاء کی درآمدات کو روکیں تاکہ ملکی مصنوعات کو فروغ مل سکے۔
ان کے مطابق صنعتی پارک سے اس وقت صابن، جوس اور تازہ پھل دوسرے ممالک کو برآمد کیے جا رہے ہیں۔

مزید دکھائیں

متعلقہ مضامین

واپس اوپر بٹن